اسلام آباد ہائیکورٹ نے ایک مرتبہ پھر نوازشریف کو خوشخبری سنا دی

اسلام آباد(آن لائن) اسلام آباد ہائیکورٹ نے نوازشریف کی العزیزیہ ریفرنس میں سزا معطلی کیلئے درخواست سماعت کیلئے مقرر کردی، چیف جسٹس اطہر من اللہ نے دو رکنی ڈویژنل بنچ سماعت کرے گا،دو رکنی بنچ میں جسٹس عامر فاروق بھی شامل ہے، بنچ پیرکو ریفرنس کی سماعت کرے گا۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعظم نوازشریف کے وکلا نے العزیزیہ ریفرنس میں سزا معطلی کی درخواست پر اعتراض دور کرکے دوبارہ دائر کردی۔

واضح رہے کہ احتساب عدالت کی جانب سے مسلم لیگ (ن) کے قائد نوازشریف کو العزیزیہ ریفرنس میں 7 سال قید اور جرمانے کی سزا سنائی تھی جس پر نوازشریف کے وکیل خواجہ حارث ان کی سزا معطل کرنے کی درخواست اسلام آباد ہائی کورٹ میں دائر کی تھی جس پر عدالت نے اعتراض لگا کر واپس کردی تھی۔عدالت کی جانب سے درخواست پر اعتراضات ہونے کی وجہ سے وکلا نے درخواست واپس لے لی تھی اور اب نواز شریف کے وکلا نے درخواست پر رجسٹرار آفس کے اعتراضات دور کرکے العزیزیہ ریفرنس میں سزا معطلی کی درخواست دوبارہ دائر کردی، درخواست نواز شریف کے وکیل منور اقبال دگل نے دائر کی۔

اسلام آبادہائیکورٹ نے سابق وزیراعظم نوازشریف کی العزیزیہ ریفرنس میں سزا معطلی کیلئے درخواست سماعت کیلئے مقرر کردی ہے، چیف جسٹس اطہر من اللہ سربراہی میں دو رکنی بنچ پیرکو سماعت کرے گا۔

واضح رہے قومی احتساب بیورو (نیب) نے بھی فلیگ شپ ریفرنس میں نوازشریف کی بریت کے خلاف درخواست دائر کررکھی ہے جب کہ العزیزیہ ریفرنس کے فیصلے کو بھی چیلنج کیا گیا جس میں نوازشریف کی سزا بڑھانے کی استدعا کی گئی۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں