’ملک لوٹنے والے احتساب کے شکنجے میں آئے توغصہ عمران خان پر نکال رہے ہیں‘ چوہان

صوبائی وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان کا کہنا ہے کہ 40 سال سے ملک لوٹنے والے چور احتساب کے شکنجے میں آئے تو غصہ عمران خان پر نکال رہے ہیں۔

پی پی چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کے بیان پر ردعمل میں فیاض الحسن کا کہنا تھا کہ زرداری نے کہا تھا کون ثابت کرسکتا ہے کہ جعلی اکاؤنٹس ان کے ہیں؟ زرداری نے کہا تھا کہ جعلی اکاؤنٹ ثابت ہوگیا تو قصور اس کا ہوگا جس کے نام پر ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ یہ رویہ جن لیڈروں کا ہو اس پر کون کان دھرے گا؟ جس کی کرپشن کی دم پر پاؤں آتا ہے تو وہ کہتا ہے کہ پاکستان کا خزانہ خالی ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ جس کی کرپشن کی دم پر پاؤں آتا ہے تو وہ کہتا ہے کہ عمران خان ناتجربہ کار ہیں اور وہ کہتا ہے جمہوریت خطرے میں ہے۔

فیاض الحسن کا کہنا تھا کہ جس کی کرپشن کی دم پر پاؤں آتا ہے تو وہ کہتا ہے کہ 18 ویں ترمیم خطرے میں ہے، بکرے کی ماں کب تک خیر منائے گی کبھی تو چھری کے نیچے آئے گی۔

انہوں نے مزید کہا کہ 40 سال سے ملک لوٹنے والے چور احتساب کے شکنجے میں آئے تو غصہ عمران خان پر نکال رہے ہیں، نہ ہم نے چیئرمین نیب کو لگایا نہ نیب کا کوئی چپڑاسی بھرتی کیا بلکہ زرداری کے خاص غلام خورشید شاہ اور نواز شریف کے غلام شاہد خاقان عباسی نےنیب کا چیئرمین بنایا۔

فیاض الحسن کا کہنا ہے کہ نیب ان کی چوریاں پکڑ رہی ہے تو غصہ عمران خان اور پاکستان پر نکال رہے ہیں، مریم اورنگزیب کا اپنے قائدین کے ہجرو وصال میں رونا دیکھ کر دکھ ہوا، کاش یہ رولا اس وقت رولیتیں جب آل شریف کا خاندان لوٹ مار کرنے میں لگا ہوا تھا۔

ان کا کہنا تھا کہ حمزہ شہباز کو پنجاب اور مریم نواز کو پورا پاکستان لوٹنے میں لگایا ہوا ہے، مریم اورنگزیب اس وقت درد دل دکھا دیتیں تو یہ ویڈیو وائرل کرنے کی ضرورت نہ پڑتی۔

یاد رہے کہ پی پی چیئرمین بلاول بھٹو نے لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا تھا کہ حکومت نا تجربہ کار ہے، نہ وفاق میں کردار ادا کر سکتی ہے اور نہ ہی پنجاب چلا سکتے ہیں۔ملک لوٹنے والے چور احتساب کے شکنجے میں آئے تو غصہ عمران خان پر نکال رہے ہیں۔

پی پی چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کے بیان پر ردعمل میں فیاض الحسن کا کہنا تھا کہ زرداری نے کہا تھا کون ثابت کرسکتا ہے کہ جعلی اکاؤنٹس ان کے ہیں؟ زرداری نے کہا تھا کہ جعلی اکاؤنٹ ثابت ہوگیا تو قصور اس کا ہوگا جس کے نام پر ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ یہ رویہ جن لیڈروں کا ہو اس پر کون کان دھرے گا؟ جس کی کرپشن کی دم پر پاؤں آتا ہے تو وہ کہتا ہے کہ پاکستان کا خزانہ خالی ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ جس کی کرپشن کی دم پر پاؤں آتا ہے تو وہ کہتا ہے کہ عمران خان ناتجربہ کار ہیں اور وہ کہتا ہے جمہوریت خطرے میں ہے۔

فیاض الحسن کا کہنا تھا کہ جس کی کرپشن کی دم پر پاؤں آتا ہے تو وہ کہتا ہے کہ 18 ویں ترمیم خطرے میں ہے، بکرے کی ماں کب تک خیر منائے گی کبھی تو چھری کے نیچے آئے گی۔

انہوں نے مزید کہا کہ 40 سال سے ملک لوٹنے والے چور احتساب کے شکنجے میں آئے تو غصہ عمران خان پر نکال رہے ہیں، نہ ہم نے چیئرمین نیب کو لگایا نہ نیب کا کوئی چپڑاسی بھرتی کیا بلکہ زرداری کے خاص غلام خورشید شاہ اور نواز شریف کے غلام شاہد خاقان عباسی نےنیب کا چیئرمین بنایا۔

فیاض الحسن کا کہنا ہے کہ نیب ان کی چوریاں پکڑ رہی ہے تو غصہ عمران خان اور پاکستان پر نکال رہے ہیں، مریم اورنگزیب کا اپنے قائدین کے ہجرو وصال میں رونا دیکھ کر دکھ ہوا، کاش یہ رولا اس وقت رولیتیں جب آل شریف کا خاندان لوٹ مار کرنے میں لگا ہوا تھا۔

ان کا کہنا تھا کہ حمزہ شہباز کو پنجاب اور مریم نواز کو پورا پاکستان لوٹنے میں لگایا ہوا ہے، مریم اورنگزیب اس وقت درد دل دکھا دیتیں تو یہ ویڈیو وائرل کرنے کی ضرورت نہ پڑتی۔

یاد رہے کہ پی پی چیئرمین بلاول بھٹو نے لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا تھا کہ حکومت نا تجربہ کار ہے، نہ وفاق میں کردار ادا کر سکتی ہے اور نہ ہی پنجاب چلا سکتے ہیں۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں