حج کے کامیاب انعقاد کے بعد عمرہ ادائیگی کی اجازت دینے کے حوالے سے سعودی حکومت کا اہم اعلان

مکہ مکرمہ(ویب ڈیسک) حج کے کامیاب انعقاد کے بعد عمرہ ادائیگی کی اجازت دینے کے حوالے سے سعودی حکومت کا اہم اعلان، سعودی وزارت حج و عمرہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ 2 ہفتے تک رواں سال حج کے انعقاد سے حاصل ہونے والے تجربے کا جائزہ لیا جائے گا، جلد عمرہ سیزن کی تیاریاں بھی شروع کر دی جائیں گی۔ سعودی گیزٹ کی رپورٹ کے مطابق سعودی وزارت حج و عمرہ کی جانب سے عمرہ ادائیگی کی اجازت دیے جانے کے حوالے سے اہم اعلان کیا گیا ہے۔

بتایا گیا ہے کہ سعودی وزارت حج و عمرہ کی جانب سے جاری اعلامیہ کے مطابق 2 ہفتے کے اندر رواں سال کرونا وائرس وبا کے باوجود حج کے انعقاد سے حاصل شدہ تجربے کا جائزہ لیا جائے گا۔ مزید بتایا گیا ہے کہ وزارت جلد ہی عمرہ سیزن کی تیاریاں بھی شروع کر دے گی۔
حج کے کامیاب انعقاد کے حوالے سے سعودی وزارت صحت کے ترجمان کا کہنا ہے کہ مقامات مقدسہ میں کورونا وائرس کا کوئی کیس رپورٹ نہیں ہوا ہے۔

حجاج کی صحت کی صورتحال تسلی بخش رہی اور کسی حاجی کو سنگین نوعیت کی طبی امداد کی ضرورت پیش نہیں آئی۔ وبا کے دوران مسجد الحرام کو دن میں 10 مرتبہ جراثیم کش ادویات سے صاف کیا جاتا ہے۔ عازمین حج کی چند گھنٹوں کے وقفے سے طبی جانچ کی گئی۔ہر حاجی کو الگ الگ کمرے میں رہائش دی گئی۔ ہر رہائشی کمپلیکس میں ایک کلینک قائم کیا گیا تھا، جہاں ڈاکٹر حاجیوں کے چیک اپ کرتے اور ان کو ضروری ادویات بھی فراہم کرتے رہے۔

حاجیوں کو بسوں میں بھی ایک دوسرے سے فاصلے پر بٹھایا گیا تھا۔اس بار حج کے دوران مسجد الحرام اور مسجد نبوی میں آنے والے حجاج کرام اور نمازیوں کے لیے واکنگ ٹریک بنائے گئے تھے۔جس کا مقصد وزارت صحت کے وضع کردہ صحت پروٹوکول کے مطابق حجاج کرام کے درمیان سماجی فاصلے کو یقینی بنانا تھا۔ واضح رہے کہ سعودی مملکت میں کورونا کے پھیلاؤ کو روکنے کی خاطر اس بار حج میں دیگر ممالک کے عازمین کی شمولیت پرپابندی عائد کر دی تھی۔ سعودی مملکت میں موجود مقامی اور تارکین وطن کو ہی حج کی اجازت دی گئی ، جن کی کُل گنتی بھی صرف 10 ہزار تک محدود تھی۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں
تبصرے
Loading...