میں بندے کی شکل دیکھ کرپہچان لیتاہوں وہ کیسے مزاج کاہے،چیف جسٹس کا طیفی بٹ کیخلاف قبضہ کیس میں 2 افراد کو گرفتار کرنے کا حکم

لاہور(آن لائن)سپریم کورٹ آف پاکستان نے طیفی بٹ کیخلاف جائیداد پر قبضہ کیس میں پولیس کو دھمکانے اور عدلیہ مخالف گفتگو کرنے پر 2 افراد کو کمرہ عدالت سے گرفتار کراد یا۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں بنچ نے طیفی بٹ کیخلاف شہری کی جائیداد پر قبضہ سے متعلق کیس کی سماعت کی، چیف جسٹس پاکستان نے استفسارکیا کہ کہاں ہے یہ طیفی بٹ؟ایس پی معاذنے عدالت کو بتایا کہ پولیس کودھمکانے والابندہ طیفی بٹ کاہے، اسلم مجید نے کہا کہ چیف جسٹس نے 17 جنوری کو ریٹائر ہوجانا ہے ،اسلم مجید اور عبدالوحیدنے کہاکہ سارے سوموٹو ختم ہو جا ئیں گے ۔

چیف جسٹس نے طیفی بٹ سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ یہ عزت کرتے ہو سپریم کورٹ کی؟اس پر طیفی بٹ نے جواب دیاکہ یہ میراآدمی نہیں ہے،چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ عدالتوں کوکمزورنہیں ہونے دیں گے،میں نے سسٹم ٹھیک کرناہے۔چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ طیفی بٹ ہوسکتاہے تمہارابیٹا اتناطاقتورنہ ہو،آپ کوایک ہفتہ پہلے زندگی میں پہلی باردیکھا،بندے کی شکل دیکھ کرپہچان لیتاہوں وہ کیسے مزاج کاہے۔

چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ ان دونوں نے عدالتی کارروائیوں میں مداخلت کی ہے ،عدلیہ کی تضحیک نہیں ہونے دیں گے ،سپریم کورٹ نے پولیس کو دھمکانے اور عدلیہ مخالف گفتگوکرنے والے دونوں افراد کو عدالت سے گرفتارکروا دیا،عدالت نے سول کورٹ کو 2ماہ میں پراپرٹی کیس کافیصلہ کرنے کا حکم دیدیا۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں