‘پاک فوج کی تضحیک’ کا الزام، انگریزی اخبار کے سینئر صحافی گرفتار

انگریزی روزنامہ کے سینئر صحافی بلال فاروقی کو مبینہ طور پر ‘پاک فوج کی تضحیک’ کے الزام میں ڈی ایچ اے کراچی میں واقع ان کے گھر سے ڈیفنس پولیس نے گرفتار کر لیا۔

کراچی پولیس کے سربراہ ایڈیشنل انسپکٹر جنرل غلام نبی میمن نے ڈان کو تصدیق کی کہ روزنامہ ایکسپریس ٹریبیون کے صحافی بلال فاروقی کو ڈیفنس پولیس کے انویسٹی گیشن افسر نے جمعہ کی شام گرفتار کر لیا۔

غلام نبی میمن نے کہا کہ 9 ستمبر 2020 کو پی ایس ڈیفنس کی پاکستان پینل کوڈ کے تحت درج ایف آئی آر میں بلال فاروقی مطلوب تھے۔

اس سے قبل ایک سینئر پولیس افسر نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ ایک شہری کی شکایت پر بلال فاروقی کے خلاف پاکستان پینل کوڈ کی دفعہ 500 اور 505 اور پریونشن آف الیکٹرانک کرائمز ایکٹ 2016 کی دفعہ 11 اور 12 کے تحت ایف آئی درج کی گئی تھی۔

ایکسپریس ٹریبیون کی ایک رپورٹ کے مطابق بلال فاروقی اخبار کے نیوز ایڈیٹر ہیں۔

صحافی کے خلاف درج کی گئی ایف آئی آر کی کاپی میں لانڈھی کے علاقے مجید کالونی کے رہائشی نے مؤقف اختیار کیا کہ وہ لانڈھی کے علاقے میں واقع فیکٹری میں مشین آپریٹر ہیں۔

شکایت گزار نے مؤقف اختیار کیا کہ انہوں نے 9 ستمبر کو ڈی ایچ اے فیز 2 ایکسٹنشن میں ایک ریسٹورنٹ کا دورہ کیا جہاں انہوں نے بلال فاروقی کا فیس بک اور ٹوئٹر اکاؤنٹ چیک کیا اور اس میں انہیں انتہائی قابل اعتراض مواد نظر آیا۔

درخواست گزار نے دعویٰ کیا کہ بلال فاروقی کی جانب سے پاکستان آرمی اور مذہبی منافرت پر مبنی مواد کی حامل انتہائی اشتعال انگیز پوسٹ شیئر کی گئیں۔

انہوں نے الزام عائد کیا کہ بلال فاروقی نے پاکستان آرمی کی تضحیک کی اور اس طرح کی سوشل میڈیا پوسٹ دشمن عناصر مذموم مقاصد کے لیے استعمال کر سکتے ہیں لہٰذا ان کے خلاف قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں
تبصرے
Loading...